بلاگ نامہ

اردو بلاگ پر قارئین کم کیوں ؟ – آخری حصہ

اسی سلسلے کی پہلی تحریر ” اردو بلاگ پر قارئین کم کیوں ؟ “ میں قارئین کم ہونے کی چند وجوہات پر ذکر کیا تھا ، آج اس تحریر میں ان مسائل کے حل کے بارے میں تحریر کررہا ہوں۔

ان مسائل کا حل

ان مسائل کا حل ایک اہم چیز ہے۔اس سلسلے میں ایک جگہ مخصوص کی جانی چاہیئے جہاں ان مسائل کےحل کو پیش کیا جائے۔اس کے علاوہ میری ایک تجویز ہے کہ اردو بلاگستان کے لیئے ایک ویب تھانہ مقرر کیا جائے جہاں اردو بلاگر اپنی شایت درج کرے اس کے بعد ویب تھانہ جو سزا دے وہ ماننا لازم ہو لیکن اس سزا کے خلاف اپیل کرنے کی اجازت بھی دی جائے۔اس طرح اردو بلاگ کاپی پیسٹ سے محفوظ رہ سکیں گے۔اس کے علاوہ ان مسائل کے چند حل یہ بھی ہوسکتے ہیں۔

  • دیگر لوگوں کو بتانا
  • اچھا مواد شامل کرنا
  • بلاگ اسپاٹ کے لیئے ایک مشورہ
  • مختلف سافٹ ویئر کے ٹیٹوریل شائع کرنا
  • اختلافات کو ختم کرنا
  • ایک دوسرے کے کام کو سراہنا
  • اپنے بلاگ سے دیگر بلاگ کو لنک دینا

دیگر لوگوں کو بتانا

آپ اپنے دوست احباب اور دیگر افراد وغیرہ کو اردو بلاگنگ کے بارے میں آگاہ کریں انہیں یہ بتائیں کہ پہلے انٹرنیٹ کی دنیا میں آپ کو سب کچھ انگریزی میں تلاش کرنا پڑتا تھا لیکن اب آپ کے ان مسائل کا حل وجود میں آگیا ہے۔اردو میں انٹرنیٹ پر بے شمار موضوعات کے بارے میں تفصیل کے ساتھ تحاریر موجود ہیں۔اور انہیں اردو بلاگ وغیرہ کے ربط فراہم کریں تاکہ وہ معلومات حاصل کرسکیں۔اور دیگر لوگوں کو اردو سیارہ ، اردو کے سب رنگ اور اردو بلاگز کے بارے میں آگاہ کریں تاکہ وہاں سے وہ روزانہ اپڈیٹ حاصل کریں اور جو تحریر ان کے معیار پر اترے اسے پڑھ کر اس کے مصنف کو اس تحریر کے بارے میں رائے دیں۔

اچھا مواد شامل کرنا

اچھے مواد سے مراد یہ ہے کہ آپ بلاگنگ کسی مقصد کے تحت کریں مثلاً کھیل ، ٹیٹوریل ، سماجی اور سیاسی  تحاریر ، مضمون ، مشاغل ، کسی سافٹ ویئر وغیرہ کے بارے میں رائے ، فلمی اور ڈراموں کی دنیا میں سے اچھے ڈرامہ اور فلمیں ڈھونڈ کر ان کے بارے میں تحاریر لکھیں۔فضول ” بونگیاں “ مارنے سے اپنے آپ کو بچائیں۔فضول ” بونگیوں “ سے مراد یہ ہے کہ اگر آپ کا کوئی سوال ہے تو اسے لکھ کر بلاگ لکھ دینا ، یہ عمل اردو بلاگنگ کے لیئے صحیح نہیں ہے کیونکہ جب سرچ انجن میں کوئی اس سوال کے متعلق تلاش کرے گا تو اگر اس کے سامنے آپ کا سوال آجائے اور پھر جواب نہ ملے تو پھر وہ تو یہی کہے گا کہ ” ہمیں تو بتایا تھا کہ اردو میں بے شمار چیزیں میسر ہیں لیکن یہ تو خود ہی سوال پوچھ رہے ہیں تحاریر کیا لکھیں گے “۔لہٰذا اس عمل سے بچنے کی کوشش کریں۔

بلاگ اسپاٹ کے لیئے ایک مشورہ

یہ مشورہ جو میں لکھ رہا ہوں یہ میرے لیئے تو بہت اچھا ثابت ہوا ہے انشاءاللہ آپ کے لیئے بھی اچھا ثابت ہوگا۔مشورہ یہ ہے کہ جب آپ بلاگ اسپاٹ میں تحریر لکھ لیں تو تحریر کے آخر میں اس تحریر کا نام انگریزی اور رومن اردو دونوں میں تحریر کردیں۔اس کے علاوہ اس تحریر میں جو چیزیں خاص ہیں انہیں بھی تحریر کردیں۔اس عمل سے سرچ انجن میں جب کوئی اس تحریر کے مطابق نتائج حاصل کرنا چاہ رہا ہوگا تو ان آخر میں لکھے ہوئے ٹیگ کی وجہ سے وہ آپ کی تحریر تک پہنچ جائے گا اور اسے آسانی ہوگی۔تحریر کے آخر میں آپ اس طرح لکھیں تاکہ قاری یہ سمجھ جائے کہ آپ نے سرچ انجن کے لیئے ہی یہ لکھا ہے۔

پہلے اس طرح کی کوئی سرخی لگائیں۔اس کے بعد جیسے نیچے لکھا ہے ویسے لکھیں۔

سرچ انجن کی تلاش کے لیئے :-

  • نوکیا موبائل 5233
  • موبائل نوکیا
  • نوکیا 5233
  • 5233 موبائل
  • قیمت پاکستانی روپے میں
  • Nokia 5233
  • Nokia Mobile 5233
  • Mobile 5233
  • Price in Pakistan

اگر آپ موبائل کے بارے میں تحریر لکھ رہے ہیں تو کچھ اوپر جیسے ٹیگ لکھیں ہیں ان کی طرح لکھیں ، اس کے علاوہ کسی بھی موضوع پر لکھ رہے ہیں تو اسی طرح لکھیں تاکہ آپ کے بلاگ کے قاری کو کوئی پریشانی نہ ہو۔

مختلف سافٹ ویئر کے ٹیٹوریل شائع کرنا

اگر آپ کو مختلف سافٹ ویئر کے بارے میں معلومات ہیں تو اسے دوسروں تک پہنچائیں تاکہ دوسرے بھی اس سے فائدہ حاصل کرسکیں۔اس طرح جب کوئی سرچ انجن میں اردو میں کسی سافٹ ویئر کے بارے میں تلاش کریں گا تو اسے فائدہ پہنچے گا اور وہ اردو کی جانب توجہ دینے لگے گا۔

اختلافات کو ختم کرنا

اردو بلاگرز کا ایک مسئلہ اختلافات ہیں۔ان اختلافات کو ختم کرنے کی کوشش کریں تاکہ ایک ہوکر اردو کے فروغ کے سلسلے کو آگے برھایا جاسکے اور کسی کی محنت کی داد ضرور دیں۔اس طرح کوشش کریں کے چھوٹے بڑے کے فرق کو ختم کرکے بھائی بھائی بن کر اردو بلاگنگ کو فروغ دیں۔

ایک دوسرے کے کام کو سراہنا

ایک دوسرے کے کام کو ضرور داد دیں کیونکہ ہر کوئی کچھ نہ کچھ تو جانتا ہے اور اگر وہ اپنی معلومات بلاگ پر شائع کرکے آپ تک پہنچارہا ہے تو اسے داد دیں نہ کہ برائی کریں۔اس طرح محبت بڑھے گی اور بلاگستان کو فائدہ ہوگا۔

اپنے بلاگ سے دیگر بلاگ کو لنک دینا

اپنے بلاگ سے دوسرے بلاگر کے بلاگ کو لنک دیں تاکہ اگر کوئی شخص آپ کے بلاگ تک رسائی حاصل کرچکا ہے تو وہ آپ کے بلاگ سے دیگر بلاگ تک بھی پہنچ جائے۔زیادہ لوگ اسی طریقے کے تحت اردو بلاگستان میں شامل بھی ہوئے ہیں اور بلاگ پڑھتے بھی ہیں۔

آخر میں ایک اور تجویز کے منظر نامہ کی بحالی پر کام کریں۔اگر انتظامیہ کے پاس وقت نہیں ہے تو یہ کام نوجوان نسل کے حوالے کریں تاکہ یہ سلسلہ دوبارہ شروع کیا جاسکے۔اس تحریر میں جو تجویز میں نے اوپر بیان کی ہے وہ بہت اہم ہے۔اس پر غور ہونا چاہیئے اس تجویز پت غور کے لیئے میں ابو شامل اور شعیب صفدر  صاحب کو ٹیگ کررہا ہوں۔

6 تبصرے برائے “اردو بلاگ پر قارئین کم کیوں ؟ – آخری حصہ”

  1. السلامُ علیکم محمد بلال بھائی بہت اچھا آرٹیکل لکھا ہے اور اچھی تجاویز دیں ہیں۔ مجھے آپ کا بلاگ سپاٹ والا مشورہ پسند آیا ہے یہ کام ہم کسی بھی پلیٹ فارم پہ کرسکتے ہیں یعنی کہ ورڈپریس کے بلاگز پہ بھی ایسا کرکے ٹریفک حاصل کی جاسکتی ہے۔

    بھائی اگر آپ کا ایس ای او کے حوالے سے کوئی تجربہ ہے تو وہ بھی لازمی شیئر کریں۔ شکریہ

    1. جو حکم جی انشاءاللہ بہت جلد

  2. حجاب says:

    ویب تھانہ کا مشورہ اچھا ہے اس میں ایک ڈرإئنگ روم بھی بنوانا چاہیئے جو لڑائی کریں ان کی خاطر وہاں کی جائے گی ۔۔

  3. کیا بلاگ سپاٹ پر باقاعدہ ٹیگز کی سہولت نہیں ہے

    1. ٹیگز کی سہولت الگ سے تو نہیں ہے ۔ لیبلز کو ہی آپ ٹیگ بناسکتے ہیں ۔ لیکن اس سے سرچ انجن سے کوئی ہی آپ کے بلاگ تک پہنچ سکے گا ۔ اس لیئے بہتر ہے کہ تحریر کے آخر میں تحریر کے موضوع کے متعلق چند عنوان لکھ دیئے جائیں تو فائدہ مند رہتے ہیں۔

تبصرہ کریں