بلاگ نامہ

کسی بھی ویب سائٹ کو بلاک کرنے کا آسان طریقہ

پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی ( پی ٹی اے ) نے انٹرنیٹ پر موجود بے شمار بے ہودہ اور فحش مواد کی ویب سائٹس کو پاکستان میں بند کررکھا ہے، لیکن اس کے باوجود بے ہودہ اور فحش مواد کی بے شمار ویب سائٹس ابھی بھی بلاک نہیں ہیں۔ ان ویب سائٹس کو خود اپنے کمپیوٹر پر بلاک کریں تاکہ معاشرے کی اس برائی سے بچوں اور اپنے خاندان کے لوگوں کو دور رکھا جائے اور کچھ حد تک  قابو پایا جا سکے۔

اپنے کمپیوٹر یا انٹرنیٹ براؤزر میں کسی بھی ویب سائٹ کو بلاک کرنے کے چند آسان طریقے درج ذیل ہیں۔

1. انٹرنیٹ ایکسپلورر

انٹرنیٹ ایکسپلورر میں ویب سائٹ کو بلاک کرنے کے لیئے آپ براؤزر کو کھولیں اور پھر مینو بار میں سے Tools پر جائیں اور پر Internet Options یا Internet Properties پر کلک کریں۔ کلک کرنے کے بعد کچھ اس طرح کی ایک نئی ونڈو کھولے گی۔

یہاں پر آپ Security Tab پر کلک کریں اس کے بعد Restricted Sites پر کلک کریں اس کے بعد Sites کے بٹن پر کلک کریں۔ پھر آپ کے سامنے اس طرح کا باکس آئے گا۔

اس باکس میں آپ ویب سائٹ کا ایڈریس لکھیں، اس کے بعد Add کے بٹن پر کلک کریں اور پھر OK کا بٹن دبادیں۔

OK کا بٹن دبانے کے بعد آپ کے سامنے Internet Options کا باکس پھر سے نظر آئے گا۔ اس باکس میں آپ Apply کا بٹن دبائیں اور پھر OK کا بٹن دبادیں۔ اس طرح انٹرنیٹ ایکسپلورر میں آپ ویب سائٹس کو بلاک کرسکتے ہیں۔

2. گوگل کروم اور فائر فاکس

گوگل کروم اور فائر فاکس میں ویب سائٹس بلاک کرنے کے لیئے آپ یہ ایکسٹینشن انسٹال کریں۔

گوگل کروم کے لیئے یہاں کلک کریں۔

فائر فاکس کے لیئے یہاں کلک کریں۔

3. کمپیوٹر سے بلاک کرنا

کمپیوٹر سے بلاک کرنے سے تمام براؤزرز پر ویب سائٹ بلاک ہوجائے گی۔ اس کے لیئے آپ اپنے کمپیوٹر کی ہوسٹ فائل میں جائیں۔ ہوسٹ فائل میں جانے کے لیئے آپ اسٹارٹ مینو سے Run کو کھولیں اور اس میں یہ پیسٹ کردیں۔

C:WINDOWSsystem32driversetc

پھر آپ hosts نام کی فائل کو Notepad میں کھولیں۔ اور پھر سب سے آخر میں آجائیں۔ جس ویب سائٹ کو بلاک کرنا ہو اس کے ایڈریس سے پہلے یہ پیسٹ کردیں127.0.0.1 پھر ایک اسپیس دیں اور ویب سائٹ کا ایڈریس لکھ دیں۔ ایڈریس لکھنے کے بعد فائل کو Save کرلیں۔

اس طرح جو ویب سائٹ آپ نے درج کی ہے وہ آپ کے کمپیوٹر پر مکمل بلاک ہوچکی ہے۔

4 تبصرے برائے “کسی بھی ویب سائٹ کو بلاک کرنے کا آسان طریقہ”

  1. السلام علیکم بہت شکریہ بلال بھائی۔ لیکن آپ نے جو آخری والا طریقہ بتایا ہے۔ ایک تو یہ مکمل نہیں ہے اور دوسرا یہ طریقہ پرشانی بھی پیدا کر سکتا ہے۔ اس طریقے کے لیے انٹرنیٹ کے بارے میں جانکاری ہونا بہت ضروری ہے۔ یعنی اگر اس طریقے کے مطابق آپ کسی ویب سائیٹ کو بلاگ کرتے ہیں تو۔ جس ویب سائیٹ کو بلاگ کرنا ہے اس کا آئی پی ایڈریس آپ کو پتہ ہونا چاہے۔

    1. وعلیکم السلام خرم بھائی
      آخری طریقہ بہت آسان ہے اس کے لیئے کسی قسم کی انٹرنیٹ کے بارے میں جانکاری ہونا ضروری نہیں ہے ۔ اور دوسری بات کہ جس ویب سائٹ کو بلاک کرنا ہے اس کا آئی پی ایڈریس معلوم ہونا چاہیئے درست نہیں کیونکہ جب آپ لوکل ہوسٹ کا آئی پی ایڈریس ڈالیں گے تو ویب سائٹ کو براؤزر کھولنے کے بجائے لوکل ہوسٹ کی آئی پی پر منتقل کردے گا اس طرح ویب سائٹ آپ کے سامنے نہیں آئے گی۔ لیکن جب آپ 127.0.0.1 لوکل ہوسٹ آئی پی کے بجائے ویب سائٹ کے اپنے آئی پی ایڈریس کو شامل کریں گے تو اس طرح ویب سائٹ آپ کے پاس زیادہ صاف آئے گی مطلب کہ جو ویب سائٹ میں خرابیاں عام طور پر ہوں گی جیسے ڈی این ایس کا پرابلم یا کوئی دیگر مسئلہ جس سے ویب سائٹ کھلنے میں مسئلہ ہو تو ہوسٹ فائل میں ویب سائٹ کا آئی پی ایڈریس اور سامنے ویب سائٹ کا ایڈریس شامل کرنے سے یہ مسئلہ عام طور پر حل ہوجائے گا لیکن اس سے ویب سائٹ بلاک نہیں ہوگی۔ اس لیئے ویب سائٹ بلاک کرنے کے لیئے لوکل ہوسٹ آئی پی 127.0.0.1 شامل کرنا ضروری ہے۔

  2. جزاک اللہ خیر۔۔۔
    اب ممنوعہ سائیٹوں کو کھولنے کا طریقہ بھی بتا دیں۔۔۔۔ 🙂

    1. یہ طریقہ تو آج کل سب کو معلوم ہے بھائی 🙂

تبصرہ کریں