بلاگ نامہ

زمرہ: اسلام

راولپنڈی سانحہ – اصل واقعہ ؟

کل دوپہر کے بعد راولپنڈی کے حالات شدید سے شدید خراب ہوگئے اور اب یہ صورتحال ہے کہ کرفیو لگا دیا گیا ہے گھر سے باہر نکلنے کی اجازت نہیں فوج کے جوان گشت کررہے ہیں۔ یہ سب صورتحال کیسے پیدا ہوئی ؟ اس کے ساتھ بے شمار جھوٹے اور سچے واقعات اور ” فلمی اسٹائل “ کی کہانیاں جوڑ دی گئی ہیں۔ اس جھوٹی سچی خبروں میں عوام الجھ گئی ہے اس کا ذمہ دار میڈیا کے علاوہ کوئی نہیں کیونکہ ان کی خاموشی نے مزید فساد بڑھنے میں اہم کردار ادا کیا۔ کچھ لوگوں اور واقعات کے مطابق مسجد میں مولانا صاحب شیعہ مخالف تقریر کررہے تھے اور جب جلوس وہاں سے گزرنے لگا تو انہوں نے تقریر بند کرنے کے بجائے جاری رکھی اور پھر پولیس سے اسلحہ چھیننے کی کوشش کی اسی طرح شیعہ حضرات نے بھی اسلحہ چھینا اور یہ سب ہوا لیکن اگر میں یہ کہوں کہ یہ واقعہ بلکل جھوٹ پر مبنی ہے تو اس میں ذرا بھی شک نہیں کیوں کہ یہ واقعہ پہلے تو خود تضادات پر مبنی ہے اور دوسرا اس واقعے کی کسی میڈیا پرسن یا وہاں پر موجود حضرات نے تصدیق نہیں کی۔ اب آتے ہیں اصل واقعہ… مزید پڑھیں »

کھیت کو صاف کرنا ہے یا گندہ ؟

ایک کھیت ہے اس میں اجازت ہے کہ یہاں کوئی بھی آئے ، یہاں کھیتی باڑی کرے یا پہلے سے موجود فصلوں سے فائدہ اٹھائے ۔ ایک دن اچانک سے ایک شخص آتا ہے وہ فصلوں پر کیچڑ پھینک کر چلاجاتا ہے ۔ کچھ لوگ اس کیچڑ کی وجہ سے اس کھیت کو استعمال کرنا چھوڑ دیتے ہیں ۔ اور آگے دیگر لوگوں کو بھی تلقین کرتے ہیں کہ کھیت سے فائدہ نہ اٹھائیں ۔ کچھ لوگ ہیں جو چاہتے ہیں کہ ہم فائدہ اٹھائیں اور اس کھیت کو صاف کریں لیکن انہیں صفائی سے روکا جاتا ہے اور اس طرح کھیت گندہ ہوتا جاتا ہے اور فصلیں تباہ ہوتی جاتی ہیں ۔ اس کھیت سے مراد گوگل ، فیس بک ، یوٹیوب اور دیگر سوشل نیٹ ورکس ہیں اور اس سے فائدہ اٹھانے والے ہم لوگ ہیں ، اب فیصلہ آپ کریں کہ آپ کھیت کی صفائی کریں گے اور اس میں دوبارہ سے صاف فصل کے لیئے بیج بوئیں گے یا کھیت کا استعمال چھوڑ کر دوسروں کو بھی تلقین کریں گے کہ نہ استعمال کریں ۔ جاگیں اور اپنی سوچ کو بلند کریں اور ان تمام سروسس کا فائدہ اٹھاکر دنیا کو اسلام کا پیغام پہنچائیں ۔… مزید پڑھیں »

گستاخانہ فلم کے خلاف احتجاج ضرور لیکن پر امن کیوں نہیں ؟

چند دن پہلے سوشل میڈیا اور دیگر مسلم ممالک میں اچانک توہین رسالت ، گستاخ رسولﷺ کی مرتکب ایک فلم کے خلاف احتجاج میں تیزی آگئی ۔ احتجاج میں اضافہ ہونے کی خاص وجہ یہ ہے کہ فلم کو جب عربی زبان میں ڈب کیا گیا تو مسلمانوں کی سمجھ میں یہ آیا کہ اس فلم میں گستاخی کی گئی ہے ۔ کیا مسلمانوں کو انگریزی میں یہ فلم دیکھنے کے بعد سمجھ نہیں آسکا کہ اس فلم میں گستاخی کی گئی ہے ؟ یا مسلمانوں کو انگریزی میں جو کچھ بناکر دکھادیا جائے مسلمان اسے درست سمجھنے لگتے ہیں ؟ ۔ مسلم ممالک میں جاری احتجاج میں دن بدن تیزی دیکھنے میں آرہی ہے ۔ سفارت خانوں پر حملے کیئے جارہے ہیں ۔ جبکہ اسلامی قانون کے مطابق سفیر کو حالت جنگ میں بھی جان کی امان حاصل ہوتی ہے ۔ خیر یہ فلم بنائی گئی توہین کی گئی اور اس کے بعد اس فلم کو ابھی تک بند نہیں کیا گیا ہے ۔ یہ سب مسلمانوں کے خلاف ہے ، اسلام کے خلاف ہے ۔ لیکن کیا بے وجہ کسی سفیر کا قتل وہ مسلم ہو یا نہ ہو دین اسلام کی تعلیمات کے خلاف نہیں ہے ؟… مزید پڑھیں »

عید الفطر 1433 ہجری مبارک ہو

السلام علیکم اللہ تعالیٰ نے مسلمانوں کے لیئے حقیقی خوشی کے دو دن مقرر کر رکھے ہیں اور وہ عیدین کے ایام ہیں یعنی عید الفطر اور عید الاضحیٰ ۔عید الفطر رمضان کے بعد شوال کی یکم تاریخ کو منائی جاتی ہے ، جو کہ مسلمانوں کے لیئے اللہ کی نعمتوں کا شکریہ ادا کرنے کا بھی بہترین ذریعہ ہے ۔ اس لیئے تمام عالم اسلام کو اور خصوصاً اردو بلاگران کو میری جانب سے عید الفطر بہت بہت مبارک ہو ۔ اس عید کے موقعہ پر ان لوگوں کو بھی ضرور یاد رکھیئے گا جو عید کی خوشی میں خوش نہیں ہوسکتے ۔ وہ لوگ جو کسی سے مانگتے نہیں ہیں سوائے اللہ کے ۔ یہ لوگ ملتے تو مشکل سے ہیں لیکن ایسے لوگوں کو ڈھونڈ کر ان کی مدد کرنے کا ثواب بھی دگنا ہے ۔ ایک بار پھر تمام عالم اسلام کو عید مبارک ہو۔ جزاک اللہ۔

ماہ رمضان تمام عالم اسلام کو مبارک ہو

بسم اللہ الرحمٰن الرحیم السلام علیکم ! ماہ رمضان برکتوں ، رحمتوں اور بے شمار نیکیاں حاصل کرنے کا مہینہ ہے ۔ جبکہ آج کے جدید دور میں رمضان کو کمائی ڈبل کرنے کا مہینہ سمجھا جاتا ہے ۔ جو چیز عام دنوں میں جتنے روپے کی ہوتی ہے اسے رمضان میں دگنا کرکے فروخت کیا جاتا ہے ۔ اس طرح ثواب حاصل کرنے کے بجائے لوگ گناہ کماتے ہیں ۔ میری اللہ رب العزت سے یہی دعا ہے کہ ایسے تمام لوگوں کو جو رمضان میں قیمتیں بڑھا دیتے ہیں انہیں ہدایت نصیب ہو ۔ آمین ۔ آج 20 جولائی 2012 کو پاکستان بھر میں چاند نظر آنے کی توقع ہے ، انشاءاللہ تعالیٰ اگر آج چاند نظر آجائے تو کل سے رمضان  المبارک کا آغاز ہوجائے گا ۔ اس لیئے میری جانب سے تمام عالم اسلام ، تمام پاکستانیوں اور خصوصاً تمام اردو بلاگران کو رمضان کی رحمتیں و برکتیں مبارک ہوں ۔ اللہ تعالیٰ ہم سب کو رمضان کا چاند دیکھنے اور اس کے بعد رمضان کے تمام احکامات پر عمل کرنے کی توفیق عطا فرمائے ۔ آمین ۔ جزاک اللہ شکریہ

کیا آپ صحیح ہیں ؟

اس دن موسم بڑا ہی سہانا تھا۔میں اسی موسم سے لطف اندوز ہونے کے لیئے اپنے گھر کے لان میں بیٹھا اخبار کا مطالعہ کررہا تھا۔کافی دیر اخبار کو پڑھتا رہا کہ شاید کوئی اچھی خبر بھی مل جائے لیکن بے سود ، اخبار میں ہرجگہ لڑائی جھگڑے ، سیاسی معاملات ، فلمی کہانیاں ، اشتہارات ، ٹارگٹ کلنگ اور دیگر بے شمار ایسی خبروں کا تانتا بندھا ہوا تھا۔اسی دوران میرا ایک دوست بڑی تیزی سے دوڑتا ہوا میری جانب بڑھ رہا تھا۔میں اخبار چھوڑ کر اس کی جانب گیا اور سلام دعا کے بعد پوچھا کہ :- ” کیا ہوا بھائی خیریت تو ہے ، اتنی جلدی میں کیوں ہو ؟ “ کہنے لگا کہ ” ہاں یار خیریت تو ہے بس میرے سے تمہاری برائی برداشت نہیں ہوئی ؟ “ ” برائی ، میں نے ہنس کر کہا یار میری برائی کون گا۔اور ویسے بھی کسی کے برا کہنے سے کیا فرق پڑتا ہے اگر ہماری نیت صاف ہو “۔۔۔۔۔ ” کہتے تو تم ٹھیک ہو پر ہم دونوں بچپن کے دوست ہیں اور میرے دوست کے خلاف کوئی ایسی غلیظ گالیاں دے تو مجھ سے نہیں برداشت ہوتا۔تھا بھی تمہارا پڑوسی اور تم اس پر جتنی… مزید پڑھیں »

چند الفاظ قرآن میں

بسم اللہ الرحمٰن الرحیم ہم نے  کچھ ایسے الفاط جو ہم کثرت سے زندگی میں استعمال کرتے ہیں ان الفاظ کو قرآن میں تلاش کرنے کی کوشش کی ہے ۔ تو وہ الفاظ آپ کے سامنے بھی رکھتے ہیں ہم ۔ تو دیکھتے ہیں ۔ لفظ تقویٰ کالفظ قرآن پاک میں 142 دفعہ آیا ہے لفظ پاک قرآن کریم میں 144 دفعہ آیا ہے نیکی کا لفظ 46 دفعہ آیا ہے گناہ کا لفظ 102 دفعہ آیا ہے بدی کا لفظ 64 دفعہ آیا ہے انبیاء کا لفظ 7 دفعہ آیا ہے وحی کا لفظ 71 دفعہ آیا ہے زبان کا لفظ 30 دفعہ آیا ہے تلاش کا لفظ 11 دفعہ آیا ہے مثال کا لفظ 58 دفعہ آیا ہے قرآن کا لفظ 77 دفعہ آیا ہے نازل کا لفظ 51 دفعہ آیا ہے عربی کا لفظ 5 دفعہ آیا ہے کافر کا لفظ 133 دفعہ آیا ہے جھوٹ کا لفظ 112 دفعہ آیا ہے منع کا لفظ 12 دفعہ آیا ہے محبت کا لفظ 43 دفعہ آیا ہے پیار کا لفظ 10 دفعہ آیا ہے نماز کا لفظ 82 دفعہ آیا ہے عید کا لفظ 19 دفعہ آیا ہے خوشی کا لفظ 11 دفعہ آیا ہے غم کا لفظ… مزید پڑھیں »

قربانی

عید الا ضحیٰ کی آمد آمد ہے۔عید الا ضحیٰ اللہ تعالیٰ کے جلیل القدر پیغمبر کی سنت ہے جو تا قیامت تک زندہ رہے گی۔عید الاضحیٰ اس واقعے کی یاد میں منائی جاتی ہے،جودنیا میں سب سے زیادہ مثالی واقعہ ہے۔قرآن کریم میں ارشاد ہے ”پس جب وہ اس کے ساتھ دوڑنے پھرنے کی عمرکو پہنچا اس نے کہا اے میرے پیارے بیٹے! یقیناً میں سوتے میں دیکھا کرتا ہوں کہ میں تجھےذبح کر رہا ہوں، پس غور کر تیری کیا رائے ہے؟ اس نے کہا اے میرے باپ! وہی کر جو تجھے حکم دیا جاتاہے۔ یقیناً اگر اللہ چاہے گا تو مجھے تُو صبر کرنے والوں میں سے پائے گا“۔”پھر جب وہ دونوں فرمانبرداری پر آمادہ ہوگئےاوراس ( یعنی باپ ) نے اس ( رضامندی ظاہر کرنے والے بیٹے ) کو ماتھے کے بل گرا لیا۔“ا۔”اور ہم نے اس ( یعنی ابراہیم ) کو پکار کر کہا اے ابراہیم ! تو اپنی رؤیا پوری کر چکا،ہم اسی طرح محسنوں کا بدلہ دیا کرتے ہیں۔یہ یقیناً کھلی کھلی آزمائش تھی۔“ حضرت ابراہیم علیہ السلام نے یہ ثابت کردیاکہ مالک کائنات اللہ تعالیٰ کے حکم کے آے سرجھکانا لازم و ملضوم ہے۔قربانی کرنا بھی ہر صاحب حیشیت پر فرض کے برابر… مزید پڑھیں »