بلاگ نامہ

ماہ: February 2012

بلاگ اسپاٹ میں فیس بک کمنٹ باکس شامل کرنا

فیس بک کمنٹس آپ کے بلاگ پر تبصرہ کرنے کی بہترین سروس ہے۔جب کوئی کمنٹ کرتا ہے تو وہ اس کی فیس بک پروفائل پر بھی شائع ہوتی ہے لیکن یہ صارف کی مرضی کے مطابق ہوتا ہے۔اس تحریر میں بلاگ اسپاٹ کے لیئے فیس بک کمنٹس کو شامل کرنے کا طریقہ بیان کیا گیا ہے۔ سب سے پہلے ہمیں جو چیز اس کام کے لیئے درکار ہے وہ ہے فیس بک پر بنائی ہوئی ایپلیکیشن۔اگر آپ کو ایپلیکیشن بنانے کا طریقہ نہیں آتا تو آپ نیچے دیئے گئے طریقے سے دیکھ سکتے ہیں۔ ایپلیکیشن بنانے کے لیئے آپ اس لنک پر جائیں۔یہاں کلک کریں۔ اب آپ یہاں پر موجود بٹن Create New App پر کلک کریں۔کلک کرنے کے بعد کچھ اس طرح کی ونڈو آپ کے سامنے ظاہر ہوگی۔ اوپر دی گئی تصویر میں جس طرح لکھا گیا ہے بلکل اسی طرح آپ بھی اپنے بلاگ کا یا کوئی اور نام لکھیں۔اس کے بعد شرائط منظور کریں اور Continue پر کلک کریں۔ اب آپ کے سامنے سیکوریٹی کا ایک کوڈ آئے گا اسے لکھیں اور Submit پر کلک کریں۔ اب آپ سیٹنگ کی جانب چلے جائیں گے۔اب سیٹنگ میں یہ تبدیلیاں کریں۔ اس میں آپ اپنے بلاگ کے مطابق… مزید پڑھیں »

بلاگ اسپاٹ سانچہ کو اردو میں تبدیل کرنا

اس سلسلے میں بے شمار لوگوں کو مشکلات کا سامنا ہوتا ہے کہ ہم کیسے سانچہ کو اردو میں کریں۔ورڈ پریس میں تو اردو میں کرنا زیادہ مشکل نہیں لیکن بلاگ اسپاٹ کے سانچہ کو اردو میں کرنا تھوڑا مشکل ہے۔آج اس تحریر میں بلاگ اسپاٹ کے سانچے کو اردو میں کرنے کے بارے میں کچھ بیان کیا گیا ہے۔ اردو میں تھیم کا تبادلہ کرنے کے لیئے آپ سب سے پہلے ڈیش بورڈ میں جائیں اس کے بعد Design کے ٹیب میں جائیں اور اب Edit Html پر کلک کریں۔ تھیم کے سانچہ کو تبدیل کرنے کے لیے آپ سب سے پہلے اپنے تھیم کا بیک اپ بنا لیں۔بیک اپ بنانا نہایت ہی آسان ہے،آپ کو اسی صفحہ میں Download Full Template لکھا ہوا نظر آئے گا۔اس پر کلک کریں تو ایک فائل آپ کے کمپیوٹر میں ڈاؤنلوڈ ہونا شروع ہوگی۔ اب اگلے مرحلے کے لیئے آپ کے پاس ایک ایسا سافٹ ویئر موجود ہونا ضروری ہے جس میں آپ xml فائل میں ترمیم آسانی کے ساتھ کرسکیں ، اس سلسلے میں بہترین سافٹ ویئر ہے نوٹ پیڈ پلس پلس۔ڈاؤنلوڈ کے لیئے یہاں کلک کریں۔ اب فائل میں ترمیم شروع کریں۔اس کے لیئے آپ کے کمپیوٹر میں جو فائل… مزید پڑھیں »

سماجی روابط پر تحاریر شیئر کرنے کے پلگ انز

سوشل نیٹ ورکس ایک ایسا رابطہ ہے جو آپ کی تحاریر یا کسی چیز کو مشہور کروانے میں معاون ہے۔اگر آپ نے اپنی تحاریر اور صفحات یا ویب سائٹ / بلاگ میں ان روابط پر تحریر شیئر کرنے کا لنک نہیں دیا ہے تو اس سے آپ کو اس صورت میں نقصان اٹھانا پڑتا ہے جب آپ کے بلاگ پر ٹریفک زیادہ نہ ہو۔سوشل نیٹ ورکس جسے اردو زبان میں سماجی روابط کہا جاتا ہے ، کسی  ویب سائٹ یا بلاگ کی ترقی کا باعث بھی بنتے ہیں۔سماجی روابط میں مشہور نیٹ ورکس مندرجہ ذیل ہیں :- فیس بک ، ٹویٹر ، ڈگ اور ٹیکنوراٹی۔ ۔اس تحریر میں آپ کو ورڈپریس کے تحریر شیئر کرنے والے پلگ انز کے بارے میں کچھ معلومات ملیں گی۔اس تحریر میں آپ کو صرف نام اور کچھ پلگ انز کے اسکرین شاٹ ہی ملیں گے۔کیوں کہ تمام شوشل پلگ انز ایک ہی جیسا کام کرتے ہیں۔بس اسٹائل وغیرہ کا فرق ہوتا ہے۔ 1:- Sociable 2:- Add this 3:- ShareThis 4:- Tell a Friend 5:- SocioFluid 6:- Social Dropdown امید ہے یہ 6 پلگ انز آپ کی مدد کریں گے۔

مرزا غالب

مرزا غالب شاعری کے ایک معروف شاعر سمجھے جاتے ہیں۔مرزا غالب کا اصل نام اسد اللہ خان تھا، مرزا غالب ہندوستان کے شہر آگرہ میں دسمبر 1797 میں پیدا ہوئے۔ان کے والد محترم کا نام عبد اللہ تھا۔مرزا غالب اپنے بچپن میں ہی یتیم ہوگئے تھے۔اس کے بعد ان کی پرورش مرزا نصراللہ نے کی جو کہ ان کے چچا بھی تھے لیکن جب مرزا صاحب آٹھ سال کی عمر میں پہنچے تو ان کے چچا بھی اس دنیا کو چھوڑ کر چلے گئے۔اس کے بعد احمد خان نے ان کا انگریزوں سے وظیفہ مقرر کر وایا۔ مرزا غالب کی شادی 13 سال کی عمر میں احمد خان کے بھائی  کی بیٹی امراءبیگم سے ہو گئی۔شادی ہونے کے بعد مرزا غالب نے اپنے آبائی شہر کو چھوڑ کر دہلی میں رہائش اختیار کی۔مرزا غالب  اچانک مالی مشکلات کا شکار ہو گئے۔آخر کار انہوں نے قرضوں کے بوجھ اور مالی مشکلات سے تنگ آکر قلعہ کی ملازمت اختیار کی۔مرزا غالب کو بہادر شاہ ظفر نے سن 1850 میں انہیں نجم الدولہ کا خطاب دیا۔ مرزا غالب شراب بہت پیتے تھے جس کی بنا پر ان کی صحت آہستہ آہستہ خراب ہوتی گئی اور وہ فروری کی 15 تاریخ سن 1869 کو اس… مزید پڑھیں »