بلاگ نامہ

ماہ: October 2011

بکرا عید

عمران اپنے ابو سےبات کرتے ہوئے۔ابو ابو ہم گائے کب لائے گیں۔ بیٹا ابھی تو پورا ہفتہ پڑا ہوا ہے لے آئیں گے بیٹا۔ابو نے جواب دیا۔ عمران :- ابو نہیں ایک ہفتہ میں ساتھ دن ہوتے ہیں،میرے سارے دوست گائے اور بکرے لے آئے ہیں۔آپ ابھی چلیں بکرا منڈی میرے ساتھ۔ ابو :- بیٹا ابھی کیسے جاسکتے ہیں ابھی تو ہمارے پاس پ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ”ابوکچھ کہتے کہتے رک گئے“ عمران :- ابھی کیوں نہیں جاسکتے ابو ویسے بھی ابھی شام ہو رہی ہے،اور ابھی تو گائے سستی ملے گی ابو پلیز چلیں نہ ابو۔ ابو :- بیٹا سمجھا کرو ابھی ہم نہیں جا سکتے،دیکھو بیٹا وہ آپ کی مرغی کیسے کھانا کھا رہی ہے۔”ابو نے بات کو ٹالنے کی کوشش کی“ عمران :- نہیں ابو ابھی مرغی نہیں آپ گائے کا بتائیں نہ مجھےکب لائیں گے۔ ابو نے جب دیکھا کہ ایسے کام نہیں چلے گا تو انہوں نے کہ دیا۔۔۔۔۔ ابو :- اچھا بیٹا ہم جمعے والے دن گائے لائیں گے،ویسے بھی پیر کو عید ہے،ٹھیک ہے بیٹا۔ عمران :- جی ابو۔  ☆☆☆☆☆☆☆ عمران کی عمر 3 سال تھی تو عمران کی امی کا انتقال ہو گیا تھا۔اس کے بعد عمران کے لیئے اس کےابو ہی ماں اور باپ… مزید پڑھیں »

قربانی

عید الا ضحیٰ کی آمد آمد ہے۔عید الا ضحیٰ اللہ تعالیٰ کے جلیل القدر پیغمبر کی سنت ہے جو تا قیامت تک زندہ رہے گی۔عید الاضحیٰ اس واقعے کی یاد میں منائی جاتی ہے،جودنیا میں سب سے زیادہ مثالی واقعہ ہے۔قرآن کریم میں ارشاد ہے ”پس جب وہ اس کے ساتھ دوڑنے پھرنے کی عمرکو پہنچا اس نے کہا اے میرے پیارے بیٹے! یقیناً میں سوتے میں دیکھا کرتا ہوں کہ میں تجھےذبح کر رہا ہوں، پس غور کر تیری کیا رائے ہے؟ اس نے کہا اے میرے باپ! وہی کر جو تجھے حکم دیا جاتاہے۔ یقیناً اگر اللہ چاہے گا تو مجھے تُو صبر کرنے والوں میں سے پائے گا“۔”پھر جب وہ دونوں فرمانبرداری پر آمادہ ہوگئےاوراس ( یعنی باپ ) نے اس ( رضامندی ظاہر کرنے والے بیٹے ) کو ماتھے کے بل گرا لیا۔“ا۔”اور ہم نے اس ( یعنی ابراہیم ) کو پکار کر کہا اے ابراہیم ! تو اپنی رؤیا پوری کر چکا،ہم اسی طرح محسنوں کا بدلہ دیا کرتے ہیں۔یہ یقیناً کھلی کھلی آزمائش تھی۔“ حضرت ابراہیم علیہ السلام نے یہ ثابت کردیاکہ مالک کائنات اللہ تعالیٰ کے حکم کے آے سرجھکانا لازم و ملضوم ہے۔قربانی کرنا بھی ہر صاحب حیشیت پر فرض کے برابر… مزید پڑھیں »

فیس بک سے وابستگی

فیس بک سے میری وابستگی کو ایک سال ہونے کو ہے ،پہلے پہل جب میں نے فیس بک اکاؤنٹ بنانے کا سوچا تو اس دوران خاکوں اور گستاخی کا معاملہ اٹھا جس کے بعد میں نے اکاؤنٹ بنانے کا ارادہ ترک کردیا۔لیکن مجھے پھر نومبر 2010 میں فیس بک استعمال کرنے کی سوجھی اس لیئے میں نے اکاؤنٹ بنا ہی ڈالا،مجھے فیس بک اس وقت استعمال کرنا تو آتی ہی نہیں تھی اس لیئے میں فیس بک کے ہر آپشن میں ”گھسنے“ کوشش کرتا ۔میں نے فیس بک دو ہی ہفتوںمیں کھنگال کر سیکھ لیا اور اچھے دوستوں کی تلاش شروع کردی،مجھے اچھے دوست ہی ملے تقریباً لہٰذا میرے پاس اچھی پوسٹ آنے لگیں۔اور اس کے ساتھ ساتھ دوست بھی آنے لگے جس کے بعد میرا یہ سفر ابھی تک جاری ہے۔اور پتہ نہیں کب تک جاری رہے گا۔ فیس بک سے ایک سال کی وابستگی کے دوران میرے پاس ایسی اچھی وال پوسٹس بھی آئیں جنھوں نے میری معلومات میں خاطر خواہ اضافہ کیا۔اس کے ساتھ دینی فائدہ کی تحریریں بھی ملیں اور دنیا وی فائدے کی تحریریں بھی موصول ہوئیں۔اس کے علاوہ میرے پاس امید بحال کرنے والی ویڈیوز بھی آئیں۔جنہیں دیکھ کر ایک الگ سی امید دل… مزید پڑھیں »

گیٹ آؤٹ طالبان

جیسا کہ عنوان ہے کے گیٹ آؤٹ طالبان آپ سمجھ رہے ہوں گے کہ یہ بھی کوئی طالبان کے بارے میں کالم یا بلاگ ہے لیکن ایسا ہر گز نہیں بلکہ میں جو کالم آپ کو پڑھنے کے لیئے مہیا کر رہا ہوں یہ کالم مشہور اخبار “جنگ” میں کالم لکھنے والےصاحب “حامد میر” کا ہے۔اسے پڑھنے کے بعد آپ اپنے خیالات میرے سے ضرور شیئر کیجئے گا۔ سترہ سالہ دانیال کے ایک انکار نے اسلام آباد کی اشرافیہ کو حیران نہیں بلکہ پریشان کر دیا۔ انکار کا یہ واقعہ پاکستان نیشنل کونسل آف دی آرٹس کے ڈرامہ ہال میں پیش آیا جہاں وفاقی دارالحکومت کے ایک معروف انگریزی میڈیم اسکول کی تقریب تقسیم انعامات جاری تھی۔ رمضان المبارک کے باعث یہ تقریب صبح دس بجے سے بارہ بجے کے درمیان منعقد کی گئی اور اتوار کا دن ہونے کے باعث ڈرامہ ہال طلبہ و طالبات کے والدین سے بھرا ہوا تھا۔ ان والدین میں شہر کے معروف لوگ شامل تھے۔ اس تقریب پر مغربی ماحول اور مغربی موسیقی غالب تھی جس میں حیرانگی کی کوئی بات نہ تھی۔ تقریب کی تمام کارروائی انگریزی میں ہو رہی تھی اور انگریزی زبان جہاں بھی جاتی ہے اپنی تہذیب کو ساتھ لے… مزید پڑھیں »

میری پہلی تحریر

آج بتاریخ 21 اکتوبر 2011 بروز جمعۃالمبارک میں اردو میں بلاگنگ کا آغاز کررہا ہوں۔جس میں میں اپنی تحریریں معلومات طنزومزاح اور بہت کچھ شائع کروں گا۔ مجھے بھی بلاگنگ کا شوق ہوا مختلف بلاگرز کو دیکھ کر،اللہ کا شکر ہے کے مجھے اچھے الفاط میں لکھنا آتا ہے،اس  خوبی پر میں اللہ کا شکرگزار ہوں۔ اللہ سے کامیابی کی دعا ہے آپ سے رائے کی توقع ہے کیوں کہ کوئی بھی بلاگر بغیر رائے کے نا مکمل ہوتا ہے اور نا امید ہوتا جاتا ہے اپنا بلاگنگ کا فن بھی کھو دیتا ہے۔